Search
  • Urooj

داستان بی بی اشراف



DAASTAN-E-BI BI ASHRAF


داستان بی بی اشراف



Jahalat ke zamane ki hai ye baat

Taalim par tha jahan mardon ka raaj

De kar hamein niswaniyat ka naam

Rakhte the jo khud ke saron par taaj

Bandishein lagai tum ne beja sabhi

Mujhe insan ke saf mein na rakha kabhi

Lafzon ka sailab tha zahen mein kahi

Jise kagaz par utarna tha mere bas mein nahi

Tum ne padhna to sikhaya magar likhna nahi

Meine bhi chalna tha sikha kahi jhukna nahi

Bhaiyon ko likhte dekh meine socha tha ye

In bandishon ke pul mein mujhe rukna nahi

Phir aisa ek bhai mujhe ghar mein mila

Jise likhna to aaya par wo padh na saka

Use taalim ka sauda fir meine kiya

Mein tujhe padhna sikhau tu mujhe likhna sikha

Lekn ye bhi tumse na dekha gaya

Use door mujhse kahi bheja gaya

Na mayoos hui or kadam dagmagaye

Thhan liya tha chalna hai yunhi kadam jamaye

Chhote se zhen mein tarqeebein aane lagi

Aas paas se phir kitaabein mangwane lagi

Pyaale mein leke rakh naqal karne lagi

Kuch hi waqt mein khud se likhne padhne lagi

Jo chaha tha kabhi wo paa hi liya

Bachpan ka sapna meine saja hi liya

Man mein kuch nai ummeedein jagane lagi

Mujh jaise or bacho ko padhane lagi

Jo kahte hai taalim aurton ke liye nahi

Unke liye nai misaal banane lagi


جہالت کے زمانے کی ہے یہ بات

تعلیم پر تھا جہاں مردوں کا راج

دے کر ہمیں نسوانیت کا نام

رکھتے تھے جو خود کے سروں پر تاج

بندشیں لگائی تم نے بےجا سبھی

مجھے انساں کے صف میں نہ رکھا کبھی

لفظوں کا سیلاب تھا ذہن میں کہیں

جسے تعلیم پر اتارنا تھا میرے بس میں نہیں

تم نے پڑھنا تو سکھایا مگر لکھنا نہیں

میں نے بھی چلنا تھا سیکھا کہیں جھکنا نہیں

بھائیوں کو لکھتے دیکھ میں نے سوچا تھا یہ

ان بندشوں کے پل میں مجھے رکنا نہیں

پھر ایسا ایک بھائی مجھے گھر میں ملا

جسے لکھنا تو آیا پروہ پڑھ نہ سکا

اس سے تعلیم کا سودہ پھر میں نے کیا

میں تجھے پڑھنا سکھاؤ، تو مجھے لکھنا سکھا

لیکن یہ بھی تم سے نہ دیکھا گیا

اسے دور مجھ سے کہیں بھیجا گیا

نہ مایوس ہوئی اور نہ ہی قدم ڈگمگائے

ٹھان لیا تھا چلنا ہے یونہی قدم جمائے

چھوٹے سے ذہن میں پھر ترکیبیں آنے لگیں

آس پاس سے پھر کتابیں منگوانے لگیں

پیالے میں لے کر راکھ میں نقل کرنے لگی

کچھ ہی وقت میں خود سے لکھنے پڑھنے لگی

جو چاہا تھا کبھی وہ پا ہی لیا

بچپن کا سپنا میں نے سجا ہی لیا

سوچ کر کچھ نئی امیدیں جگانے لگی

مجھ جیسے کچھ اور بچوں کو پڑھانے لگی

جو سمجھتے تھے تعلیم عورتوں کے لیے نہیں

ان کے لیے نئی مثال بنانے لگی



Ye nazm bibi ashraf (ashrafunnisa) par likhi gai hai. Bibi ashraf jo 1840 mein 1 shia zamindar family mein paida hui. Unke walid ghar se door sahar mein base hue the or maa unki kam umri mein faut hogai thi. Wo bijnore ke 1 chhote se gaon bahnira ki rahne wali thi. Us zamane mein ladkiyon ko sirf arbi padhna sikhaya jaata tha or unhe likhna nahi sikhaya jaata tha lekin bibi ashraf ko Padhai likhai ka bohot sauk tha or kitni jaddo jahad ke baad unho ne padhna likhna sikha uska kuch hissa is nazm mein pesh kiya gaya hai.


یہ نظم بی بی اشرف (اشرف اننسا ٔ) پر لکھی گئی ہے- بی بی اشرف 1840میں ایک شیاء زمیندار گھرانے میں پیدا ہوئیں- وہ بجنور کے ایک چھوٹے سے گاؤں بہنیرا کی رہنے والی تھی -ان کے والد گھر سے دور شہر میں بسے تھے اور ماں اُن کی کم عمری میں فوت ہوگئی تھی-اُس زمانے میں لڑکیوں کو صرف عربی پڑھایا جاتا تھا ور انہے لکھنا نہیں سکھایا جاتا تھا لیکن بی بی اشرف کو پڑھنے لکھنے کا بہت شوق تھا اور کتنی جدّو جہد کے بعد انہوں نے تعلیم حاصل کی اسکا کچھ حصّہ اس نظم میں پیش کیا گیا ہے-



Neha Ansari


Introduction

Mein Neha Ansari, Naturopath aur Acupuncturist hoon. 2010 se meine padhai ke sath likhna shuru kiya tha jo ab tak jaari hai. Meri nazmon mein aas paas ki jhalak nazar aati hai aur mein apni zindagi ke tajurbon ke baare mein likhna zyada pasand karti hoon.

0 views

Recent Posts

See All

EDITORIAL VOL. IV

Parcham wishes everyone an Inqualabi Women’s Day. It is 111 years since International Women’s Day was first celebrated, a victory of collectivization of women against the inhumane working conditions,

International Women’s Day 8th March’2020

औरतें उठी नहीं तो…….. जुल्म बढ़ता जाएगा । औरतें उठी नहीं तो…….. जुल्म बढ़ता जाएगा । औरतें उठी नहीं तो…….. जुल्म बढ़ता जाएगा । आंतरराष्ट्रीय महिला दिन 8 मार्च 2020 औरतें उठी तो…….. ज़माना बदलेगा । औरतें उठ

©2019 by Parcham Collective. Proudly created with Wix.com